66

ہر طاقتور کو قانون کے نیچے لایا جا رہا ہے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہرطاقتور کو قانون کے نیچے لایا جارہا ہے،وہی معاشرہ ترقی کرتا ہے جہاں قانون کی حکمرانی ہو۔

سپریم کورٹ کے تحت ’بڑھتی آبادی پر فوری توجہ‘ کے موضوع پر منعقدہ سمپوزیم سے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ ماضی میں کسی نے سوچا نہیں ہوگا کہ وزیراعظم بھی قانون کے تابع ہے۔

انہوں نے اس موقع پر چیف جسٹس ثاقب نثار کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ انہوںنے وہ کام کیے جو جمہوری حکومتوں کوکرنے تھے۔

وزیراعظم نے کہا کہ آبادی کے کنٹرول پر ٹاسک فورسز بنادی ہیں، خوشی ہے کہ آج کی تقریب میں تمام صوبوں کے وزراء اعلیٰ موجود ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ آبادی اور ماحولیات آپس میں جڑے ہیں، انہیں نصاب تعلیم میں شامل کرنا ہو گا، حکومت آبادی پرکنٹرول کی تشہیر کے تمام اقدامات کرنے کو تیار ہے، عدالتی دلچسپی سے آبادی کا معاملہ ترجیحات میں آگے لے آئے ہیں ۔

ان کا کہناتھاکہ سپریم کورٹ کے پاناما فیصلے نے نئے پاکستان کی بنیاد رکھ دی ہے، اب جن بوتل سے نکل چکا ہے ، کوئی نہیں سوچے گا کہ وہ قانون سے بالاتر ہے، وزارت داخلہ میرے نیچے ہے مگر سی ڈی اے عدالت کو بتا رہی ہے کہ عمران خان نے بنی گالا گھر میں کیا غلطیاں کیں۔

وزیراعظم نے خطاب میں گورنر ہائوس لاہور کی دیواریں گرانے کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ گورنر ہائوس کی دیوار اس لیے ہٹانا چاہتا ہوں تاکہ اُس کے لان دور سے نظر آئیں۔

عمران خان نے یہ بھی کہا کہ عدالتی نظام میں بہتری کےلئے قوانین میں ترامیم لارہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں