56

اسرائیلی اخبار کی دہشتگرد کو للکارنے والے عزیز کی تعریف

افغان نژاد عبدالعزیز کی ہمت کو اسرائیلی اخبار نے اپنی شہہ سرخیوں میں جگہ دی۔

اخبار ’’ہاریٹز‘‘ نے لکھا کہ عبدالعزیز نے ہی حملہ آور کو خوفزدہ ہو کر بھاگنے پر مجبور کیا، ورنہ اور بہت سے لوگ مارے جاتے۔

نیوزی لینڈ کی مسجد میں نمازیوں پر حملہ کرنے والے آسٹریلوی دہشتگرد کو عبدالعزیز نے للکارتے ہوئے اس کا پیچھا کیا اور اسے بھگانے میں کچھ حد تک کامیاب بھی ہوا ۔

اسرائیلی اخبار ’’ہاریٹز‘‘ نے عبدالعزیز کی زبانی حملے کا احوال کچھ اس طرح رقم کیا۔

اخبار نے لکھا کہ عبدالعزیز کے بقول وہ حملہ آور کی توجہ بٹانے کے لیے چیختا چلاتا ہوا باہر کی طرف بھاگا۔ حملہ آور جب مزید اسلحہ لینے اپنی کار کی طرف گیا تو اس نے حملہ آور پر کریڈٹ کارڈ مشین پھینک کر ماری۔

عبدالعزیز نے بتایا کہ اس کے کانوں میں اپنے پانچ اور گیارہ سال کے بچوں کی آوازیں آرہی تھیں جو اسے واپس اندر بلا رہے تھے، اتنے میں حملہ آور نے مڑ کر پھر فائرنگ شروع کردی۔
عزیز نے کہا کہ گولیوں سے بچنے کیلیے کاروں کے درمیان بھاگتا رہا۔

اتنے میں حملہ آور کی پھینکی ہوئی ایک گن پڑی نظر آئی،وہ اٹھا کر حملہ آور پر تانی، فائر کیا، مگرگن خالی تھی۔

اسرائیلی اخبار نے لکھا کہ عزیز نے بتایا کہ اسے حملہ آور کا سامنا کرتے کسی لمحے خوف محسوس نہیں ہوا۔ یہ ایسے ہی تھا جیسے وہ آٹو پائلٹ پر تھا اور اسے یقین تھا کہ اللہ نے ابھی اس کے مرنے کا وقت متعین نہیں کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں